سوات سے تعلق رکھنے والے سابق چیف جسٹس ناصرالملک نگران وزیراعظم مقرر

اسلام آباد: حکومت اور اپوزیشن کے درمیان نگراں وزیراعظم کے لیے سابق چیف جسٹس پاکستان جسٹس (ر) ناصرالملک کے نام پر اتفاق ہوگیا ہے۔

اسلام آباد میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے نگراں وزیراعظم کے لیے جسٹس (ر) ناصرالملک کے نام کا اعلان کیا۔

قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا کہ نگراں وزیراعظم کے نام کا چناؤ مشکل کام تھا تاہم آج بھی تاریخی دن ہے اور ہم جمہوری فیصلہ کر رہے ہیں، ایسا فیصلہ جو پاکستان کے عوام اور سیاسی پارٹیوں کے لیے قابل قبول ہو۔ ان کا کہنا تھا کہ جسٹس (ر) ناصرالملک کا نام ہم نے پارٹی میں مشاوت کے بعد منتخب کیا، 6 ناموں میں سے 4 نام زیر غور آئے جس میں سے جسٹس (ر) ناصر الملک کو منتخب کیا، اب جو پارٹی الیکشن جیت کر آئے گی جسٹس (ر) ناصرالملک حکومت ان کے حوالے کریں گے۔

پریس کانفرنس میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ جسٹس (ر)  ناصرالملک کےنام پر سب متفق ہیں، کئی ہفتوں سے اس حوالے سے مشاورت کا عمل جاری تھا، اس پر فیصلہ کرنا آسان نہیں تھا لیکن اپوزیشن جماعتوں اور قائد حزب اختلاف کا شکرگزار ہوں۔

اس سے قبل وزیراعظم شاہدخاقان عباسی اور اپوزیشن لیڈر خورشیدشاہ کے درمیان نگراں وزیراعظم کے معاملے پر متعدد ملاقاتیں ہوئیں جس میں نگراں وزیراعظم کے لیے کسی نام پر اتفاق رائے نہیں ہوسکا تھا تاہم آج کی ملاقات میں حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ڈیڈلاک ختم ہوا اور نگراں وزیراعظم کا نام فائنل کرلیا گیا۔

Facebook Comments