فضل محمود روخان

سنڈیا باباجی

میاں گل عبدالودود (بانئی جدید ریاست سوات) اپنے مصاحبوں کے ہمراہ بیٹھے ہوئے تھے کہ اسی اثنا میں ایک معمر عورت ’’شلمانو ابئی‘‘ لاٹھی ٹیکتے ہوئے شاہی دربار آگئی۔ بادشاہ صاحب کے حضور میں اپنا کل اثاثہ (سونے کے زیورات) پیش کرتے ہوئے عاجزانہ انداز میں کہہ گئی کہ ’’حضور، مجھ سے یہ لے لیں، لیکن میرا شوہر مجھے واپس ...

مزید پڑھیں »

بلوگرام لڑکیوں کی تعلیم میں نظر انداز

بلوگرام لڑکیوں کی تعلیم میں نظر انداز | فضل محمود روخان میری حیرت کی انتہا نہ رہی جب مجھے بتایا گیا کہ بلوگرام میں پرائمری گرلز سکول موجود ہے لیکن اس کے علاوہ گرلز سکول کسی کیٹیگری میں نہیں ہے۔ بلوگرام کی بچیاں مزید تعلیم حاصل کرنے کے لیے قمبر جاتی ہیں۔ وہاں گرلز مڈل سکول بھی ہے اور گرلز ...

مزید پڑھیں »

ڈانسنگ طالبان

ڈانسنگ طالبان | فضل محمود روښانؔ مجھے وہ دن آج بھی یاد ہے جب ہم ماہنامہ ’’سوات‘‘ کا پہلا شمارہ والئی سوات کو دینے کے لیے اُن کے محل سیدو شریف گئے تھے۔ یہ جنوری 1987ء کی بات ہے۔ ابھی ہم اُن کے محل میں داخل ہی ہوئے تھے کہ ہمیں میاں جی ’’حضرت یونس‘‘ ملے۔ ہمارے ہاتھ میں ’’سوات‘‘ ...

مزید پڑھیں »

عکس در عکس

عکس در عکس | فضل محمود روخان تخت لاہور میں رنجیت سنگھ کا دربار لگا ہوا ہے۔ فرانس کا سفیر بھی موجود ہے، دربار میں اُن کا ایک وزیر آتا ہے اور رنجیت سنگھ سے کچھ عرض کرتا ہے۔ جواب میں رنجیت سنگھ کہتا ہے کہ یہ نامنجور (نامنظور) ہے۔ کچھ دیر بعد ایک اور وزیر آتا ہے اور رنجیت ...

مزید پڑھیں »

مکافات عمل

مکافات عمل  | فضل محمود روخان جنرل مشرف کے دورِ حکومت میں جب نواز شریف جلا وطنی کی زندگی گزارنے پر مجبور تھا، تو اُس وقت ملک کی دو بڑی پارٹیوں کے لیڈران نے یہ طے کیا کہ ہمیں کم از کم پاکستان میں اپنا اقتدار محفوظ کرنے کے لیے اکٹھے ہوکر کام کرنا چاہئے۔ اس مقصد کے حصول کے ...

مزید پڑھیں »

سوات ڈلہ

سوات ڈلہ | تحریر : فضل محمود روخان یہ 1917ءکا سال تھا۔ میاں گل عبدالودود نے ریاست سوات کی بنیاد رکھی۔ گو کہ اس ریاست کے اب ٹھیک سو سال گزر چکے ہیں۔ یہ ریاست چار ہزار مربع میل پر محیط تھی اور یہ ”ریاستِ خداداد یوسفزئی“ کہلاتی تھی، یعنی یوسف زئی پختونوں کی حکومت۔ 1969ءکو مارشل لائی حکومت نے ...

مزید پڑھیں »

شرب گل کے بارے میں کچھ اور

  فتح پور بَرسوات سے بہادر خان مجھ سے ملنے آیا اور آتے ہی کہنے لگا کہ پرنس امیر زیب سے ملنا ہے، لیکن اُن کے سامنے میرا تعارف نہیں کرنا۔ یہ اُن دنوں کی بات ہے جب وہ روبہ صحت تھے۔ گو کہ گلے میں تکلیف ہونے کی وجہ سے وہ بہت دھیمی آواز سے باتیں کرتے تھے، اس ...

مزید پڑھیں »

Responsive WordPress Theme Freetheme wordpress magazine responsive freetheme wordpress news responsive freeWORDPRESS PLUGIN PREMIUM FREEDownload theme free