دوروزہ صحافتی وامن کانفرنس،ملاکنڈڈویژن کے صحافیوں کا مطالبہ منظور

زما سوات ڈاٹ کام (28اپریل2019ء)سوات میں فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے زیراہتمام دوروزہ صحافتی وامن کانفرنس اختتام پذیر، پی ایف یو جے کے ملاکنڈڈویژن کی سطح پر صحافیوں کی یونین کی منظوری دیدی، دوروزہ کانفرنس میں ملک بھر اورآزادکشمیر، گلگت بلتستان کے صحافیوں نے بھرپور شرکت کی۔ سوات پریس کلب میں منعقد ہونے والا یہ کانفرنس اپنی نوعیت کاپہلا کانفرنس تھا، جو صحافیوں کی نمائندہ تنظیم نے سوات میں منعقد کانفرنس میں ملک بھر اور ملاکنڈڈویژن کے صحافیوں نے غیرمعمولی دلچسپی ظاہرکی، تفصیلات کے مطابق فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے زیراہتمام سوات پر یس کلب میں دروزہ صحافتی وامن کانفرنس کاانعقاد کیاگیا، کانفرنس میں ملک بھرکے صحافیوں نے کثیرتعداد میں شرکت کی۔ واضح رہے کہ سوات کی صحافتی تاریخ میں پہلی بار فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے زیر اہتمام دو روزہ صحافتی امن کانفرنس کا انعقاد، کانفرنس میں ملک بھر کے کارکن صحافیوں کی بھر پور شرکت، کانفرنس کے پہلے سیشن میں صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئ نے بحیثیت مہمان خصوصی شرکت کی دو روزہ کانفرنس میں ملاکنڈ ڈویژن سے تعلق رکھنے والے صحافیوں کی غیر معمولی دلچسپی، سوات پریس کلب کے چیئرمین  شہزاد عالم کی کاوشوں سے سوات پریس کلب میں کانفرنس کا انعقاد ممکن ہوا تفصیلات کے مطابق سوات کے صحافتی تاریخ میں پہلی بار پاکستان کے سب سے بڑے صحافتی تنظیم پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے زیر اہتمام سوات پریس کلب میں دو روزہ کانفرنس کا انعقاد ہوا جس کا موضوع ” صحافت اور امن ” ہے اس دو روزہ صحافتی و امن کانفرنس کے پہلے سیشن میں صوبائی وزیر اطلاعات سب سے بڑے صحافتی تنظیم پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے زیر اہتمام سوات پریس کلب میں دو روزہ کانفرنس کا انعقاد ہوا جس کا موضوع ” صحافت اور امن ” ہے اس دو روزہ صحافتی و امن کانفرنس کے پہلے سیشن میں صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئ نے بحیثیت مہمان خصوصی شرکت کی جبکہ کانفرنس میں پی ایف یو جے ورکرز کے مرکزی صدر پرویز شوکت، جنرل سیکرٹری راجہ ریاض، شمیم شاہد، ضیاء الحق سمیت دیگرصحافیوں، صوبہ پنجاب کے مختلف شہروں سے تعلق رکھنے والے کارکن صحافیوں پریس کلبوں کے صدور و جنرل سیکرٹری، کراچی اور صوبہ سندھ کے دیگر علاقوں سے تعلق رکھنے والے کارکن صحافیوں کے علاوہ ملاکنڈ ڈویژن کے طول و عرض سے تعلق رکھنے والے صحافتی تنظیموں اور پریس کلبوں کے ذمہ داروں نے بھر پور شرکت کی کانفرنس میں قیام امن کیلئے سوات کے صحافیوں کا خصوصی طور پر ذکر کیا گیا اور سوات کو شہداء صحافت کا علاقہ قرار دیا فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کی طرف سے سوات پریس کلب کے صحافیوں کو غازی قرار دیتے ہوئے ان کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا اور ان کی صحافت کو سراہا گیاسوات میں اپنی نوعیت کا پہلا صحافتی و امن کانفرنس منعقد کرنے کا اعزاز سوات پریس کلب کے چیئرمین شہزاد عالم کوحاصل ہے جس پر سوات کے سینئر صحافی غفور خان عادل نے سوات پریس کلب کے چیئرمین اور کارکن صحافیوں کے قافلے کے سالار شہزاد عالم کو خراج تحسین پیش کیا ہے کہ ان کی انتھک کوششوں کیوجہ سے سوات میں پہلی مرتبہ ملک کے سطح پر ایک ایسا پروگرام منعقد ہوا جس میں ملک بھر کے کارکن صحافیوں کو ایک دوسرے کو سننے اور ملنے کا موقع ملا انہوں نے پی ایف یو جے کی طرف سے ملاکنڈ ڈویژن کو ممبر شپ دینے کے اعلان کا بھی خیر مقدم کیا۔  پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے صدر پرویز شوکت نے اپنے اختتامی خطاب میں کہا ہے کہ قربانیوں کے حوالے سے سوات کے صحافیوں نے ایک ایسی تاریخ رقم کی ہے جو رہتی دُنیا تک یاد رکھی جائے گی، حکومت کی طرف سے مقامی اخبارات کی بھر پور حوصلہ افزائی کرنی چاہئے، کارکن صحافیوں کے حقوق کی جنگ لڑتے لڑتے عمر کا زیادہ حصہ اس میں گزر گیا ہے۔ سوات پریس کلب میں دو روزہ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر مقامی صحافیوں سمیت ملک بھر سے آنے والے صحافیوں نے درپیش مسائل اور مشکلات پر بحث کی جبکہ سوات سوات پریس کلب کے چیئرمین شہزاد عالم نے صحافیوں کو درپیش مسائل کے حوالے سے بتایا، پی ایف یو جے کے جنرل سیکرٹری راجہ ریاض اور دیگر نے بھی سوات کے صحافیوں کی قربانیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ سوات شہداء صحافیوں کا شہر ہے اور یہاں کے صحافیوں کی قربانیوں کی بدولت سوات اور پورے ملک میں امن کا قیام ممکن ہوا ہے انہوں نے کہا کہ صحافیوں کی ان قربانیوں کو پورے ملک میں قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ میڈیا کالونی سوات پریس کلب کے صحافیوں کا حق ہے اور صوبائی وزیر اطلاعات کے اس حوالے سے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ کانفرنس دوروز جاری ہونے کے بعد اختتام پذیر ہوا

( خبر جاری ہے )

ملتی جلتی خبریں
Comments
Loading...