خیبرپختونخوا بلین ٹری منصوبے میں بےقاعدگیوں کا انکشاف

خیبرپختونخوا بلین ٹری سونامی منصوبے میں وسیع پیمانے پر بے قاعدگیوں کا انکشاف ہوا ہے۔ آڈیٹر جنرل نے 2016-17 کی رپورٹ میں 47 کروڑ روپے سے زائد کی بے قاعدگیوں کی نشاندہی کردی ۔

( خبر جاری ہے )

پشاور(ویب ڈیسک )آڈیٹر جنرل کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ چترال میں 267 ہیکڑ پر لاکھوں پودوں میں سے صرف چند سو موجود تھے، دیر اپر میں بلین ٹری سونامی کےلئے 55 افراد کو نرسریز کے ٹھیکے دیئے گئے ،55میں سے 44 افراد نے مطلوبہ مقدار سے کم درخت فراہم کئے۔

( خبر جاری ہے )

آڈٹ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اپردیرمیں ہزاروں مکعب فٹ غیر قانونی درخت کاٹنے والوں کیخلاف بروقت اقدامات نہیں اٹھائے گئے،غیر قانونی درخت کاٹنے سے خزانے کو 23کروڑ55لاکھ کا نقصان ہوا۔
آڈٹ رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ڈی آئی خان میں بلین ٹری سونامی کے تحت لاکھوں درختوں میں چند سو لگائے گئے ہیں۔

( خبر جاری ہے )

ملتی جلتی خبریں

( خبر جاری ہے )

Comments
Loading...