نئے سال کے آغاز پر انتخابات ہوتے نظر آرہے ہیں،مولانا فضل الرحمان

آزادی مارچ کے موقع پر پس پردہ بھی مذاکرات ہو ئے ہیں اور ہمارے ساتھ یہ طے کیا گیا ہے کہ دسمبر تک تبدیلی آئے گی

اسلام آباد (ویب ڈیسک)امیر جمعیت علماء اسلام (ف)مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ مجھے یقین دلایاگیا ہے کہ دسمبر تک تبدیلی آئے گی۔ آئندہ تین ماہ کے اندر نئے انتخابات کی یقین دہانی کروائی گئی ہے۔ حکومت جائے گی یا ان ہاؤس تبدیلی آئے گی؟اس کا انتظار کرنا ہو گا۔ نئے سال کے آغاز پر انتخابات ہوتے نظر آرہے ہیں۔ آزادی مارچ کے مقاصد حاصل ہو رہے ہیں، انتظار کرنا چاہیئے۔ اس حقیقت کو تسلیم کر لیا گیا ہے کہ یہ حکومت نہیں چلتی۔

( خبر جاری ہے )

نجی ٹی وی سے انٹرویو میں مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ جب اپوزیشن جماعتوں کی رہبر کمیٹی کے ساتھ حکومتی کمیٹی کے مذاکرات ہوئے تھے تو رہبر کمیٹی نے کہا تھا کہ یا ہمیں استعفیٰ چاہیئے یا استعفیٰ کے برابر کی چیز، یہ برابر کی چیز مبہم نہیں تھی کہ کوئی شخص کہے کہ امانت ہے، اس میں سیدھی سادھی اور صاف بات تھی کہ یااس کے برابر یعنی تین ماہ کے اندر، اندر الیکشن ہو۔ اب جب یہ چیز ہمیں حاصل ہو رہی ہے اور حاصل ہونے کی طرف جارہی ہے تو پھر میرا خیال ہے کہ ہمیں اسی کا انتظار کرنا چاہیئے۔

ایک سوال پر مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ آزادی مارچ کے موقع پر پس پردہ بھی مذاکرات ہو ئے ہیں اور ہمارے ساتھ یہ طے کیا گیا ہے کہ دسمبر تک تبدیلی آئے گی، ان ہاؤس تبدیلی آئے گی یا حکومت گھر جائے گی یہ میرا مسئلہ نہیں ہے یہ ان کا مسئلہ نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ مجھے کہا گیا کہ تین ماہ کے اندر عام انتخابات ہوں گے اور اس کا انتظار کرنا ہو گا۔ ان کا کہنا تھا کہ آج (منگل)کو اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی بلائی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر میاں محمد شہباز شریف ملک سے باہر ہیں اور (ن)لیگ کا وفد آئے گا اور باقی جماعتوں کے قائدین آئیں گے۔

ملتی جلتی خبریں
Comments
Loading...