مینگورہ ، غیرقانونی ٹرانسپورٹ اڈے ختم کرنے کے لئے ایک ہفتہ کی ڈیڈ لائن

سوات ٹرانسپورٹ فیڈریشن کے اہم اجلاس میں انتظامیہ کو ہفتہ کی ڈیڈ لائن دے دی گئی

مینگورہ میں غیرقانونی ٹرانسپورٹ اڈوں کوختم کرنے کے لئے ایک ہفتہ کی ڈیڈلائن،ٹیکسوں کے حوالے سے دوہرے طریقہ کار مستردکردیا گیا۔سوات ٹرانسپورٹ فیڈریشن کا ایک غیرمعمولی اجلاس جنرل بس سٹینڈ میں زیرصدارت سوات ٹرانسپورٹ فیڈریشن کے صدر خائستہ باچا معنقد ہوا

سوات (زما سوات ڈاٹ کام)مینگورہ میں غیرقانونی ٹرانسپورٹ اڈوں کوختم کرنے کے لئے ایک ہفتہ کی ڈیڈلائن،ٹیکسوں کے حوالے سے دوہرے طریقہ کار مستردکردیا گیا۔سوات ٹرانسپورٹ فیڈریشن کا ایک غیرمعمولی اجلاس جنرل بس سٹینڈ میں زیرصدارت سوات ٹرانسپورٹ فیڈریشن کے صدر خائستہ باچا معنقد ہوا۔

اجلاس میں سوات، بونیر، شانگلہ، دیراورملاکنڈکے ٹرانسپورٹ برادری کے نمائندوں نے شرکت کی، اجلاس میں اس پرافسوس کااظہارکیاگیاکہ انتظامیہ کی طرف سے ٹرانسپورٹ اڈوں کے حوالے سے دوہرے طریقہ کار نے پورے سسٹم کو متاثرکررکھاہے، ہم نے قانون کی پاسداری کرتے ہوئے انتظامیہ کے احکامات پر عملدرآمد کویقینی بنایا لیکن جن لوگوں نے قانون کو پاؤں تلے روندتے ہوئے اپنے مؤقف پرقائم رہے تو ان کے خلاف قانون حرکت میں آنے کے بجائے مکمل طور پر خاموش رہا۔

انہوں نے کہا کہ ہماری خاموشی کاغلط مطلب لیاگیاہے اب ہم اس مطالبے میں حق بجانب ہے کہ ہم بھی شہرکے اندراڈے قائم کرکے اپنی خاموشی کوتوڑڈالے، انہوں نے کہا کہ ہم انتظامیہ کو ایک ہفتہ کی ڈیڈلائن دیتے ہیں کہ مینگورہ شہرمیں جتنے بھی غیرقانونی اڈے قائم ہیں ان تمام کو ختم کرکے ٹرانسپورٹروں میں پائی جانے والی تشویش کو ختم کردیاجائے۔ اجلاس میں خائستہ باچا، افضل خان، عطاء اللہ خان، بہادرخان، نصیب خان، میرچمن، میاں محمداقبال اور دیگر نے شرکت کی۔

( خبر جاری ہے )

ملتی جلتی خبریں
Comments
Loading...