سیدو ہسپتال کو داؤ پر نہیں لگائیں گے باقاعدہ طور پر ہر شعبے کی مانیٹرنگ ہوگی۔ سیف اللہ خان

سوات(زما سوات ڈاٹ کام) گڈ گورننس خیبر پختونخوا کے سیکرٹری ڈاکٹر علی حیدر خان کی خصوصی ہدایت پر ڈسٹرکٹ گڈ گورننس کے سیکرٹری سیف اللہ خان نے اپنے ٹیم کے ہمراہ سیدو گروپ آف ٹیچنگ ہسپتال سیدوشریف کا دورہ کیا۔ دورہ کے موقع پرڈی ایم ایس ڈاکٹر ملک سعد اللہ خان، ڈی ایم ایس ڈاکٹر نجیب اللہ خان، گڈ گورننس تحصیل بابوزئی کے سیکرٹری اشفاق احمد،تحصیل مٹہ سے زاہد اللہ اور سابق نائب ناظم فاروق احمد،ابراہیم خانخیل اور دیگر بھی ہمراہ تھے سیف اللہ خان نے سیدو ہسپتال کے مختلف شعبوں کا جائزہ لیا انہوں نے او پی ڈی، میڈیکل وارڈ اور کارڈیک وارڈ،کلینکل لیبارٹری سمیت ادویات سٹور، ایڈمنسٹریشن بلاک اور دیگر حصوں کا بھی دورہ کیا اور علاج معالجہ کیلئے عوام کو دی جانے والی سہولیات کا جائزہ لیا

اس موقع پر سیف اللہ خان نے ہسپتال میں مریضوں کی عیادت کرتے ہوئے انہیں فراہم کی جانے والی علاج معالجہ کی سہولیات سے متعلق دریافت کیا سیف اللہ خان نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سیدو شریف ہسپتال سمیت کسی بھی ادارے میں کرپشن یا کسی قسم کی بے ضابطگی کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا اور کرپشن کرنے والے افسران اور ملازمین کو نشان عبرت بنایا جائے گا انہوں نے کہا کہ طبی معیار بہتر بنانے کیلئے سیدوشریف ہسپتال میں سزا اور جزاء کے نظام کو آگے لانا ہوگا تاکہ اس نظام میں کارکردگی دکھانے والے ڈاکٹرز،نرسز،پیرامیڈیکل سمیت تمام سٹاف کی حوصلہ افزائی اور خراب کارکردگی کے حامل عملے کوسزا دی جائے

انہوں نے کہا کہ گڈ گورننس کیلئے ہمیں مشترکہ طور پر ہسپتال کو ٹھیک کرنا ہوگا گڈ گورننس کے ذریعے عوام کو ریلیف دیں گے عوام کو ریلیف دینے کیلئے عملی اقدامات کریں گے سیدوشریف ہسپتال سمیت سوات میں مختلف محکموں میں عوام کیلئے آسانیاں پیدا کی جائے گی جس کیلئے سخت فیصلے کرنے ہونگے انہوں نے واضح کیا کہ سیدو ہسپتال کو داؤ پر نہیں لگائیں گے باقاعدہ طور پر ہر شعبے کی مانیٹرنگ ہوگی کسی کے ساتھ کوئی رعایت نہیں ہوگی ان کے حوالے سے عوام دوست پالیسی کو اپنانا ہوگا بعدازاں سیف اللہ خان نے سیدو گروپ آف ٹیچنگ ہسپتال کے ایم ایس سے ملاقات کی اور ہسپتال کے مزید بہتری کے لئے گفتگو ہوئی اور عوام کے مفاد میں ضروری فیصلے کئے گئے اسی طرح انہوں نے سول ڈسپنسری امانکوٹ اور اوڈیگرام بی ایچ یو کا بھی تفصیلی دورہ کیا اور وہاں پر موجود سہولیات کا جائزہ لیا۔

( خبر جاری ہے )

ملتی جلتی خبریں
Comments
Loading...