تھانہ فتح پور پولیس کی کارروائی ،زنجیروں سے باندھی گئی لڑکی بازیاب

لڑکی نے اپنی پسند سے نکاح کیا تھا

سوات(زما سوات ڈاٹ کام )تھانہ فتح پور پولیس  کے مطابق ان کو اطلاع ملی کہ سپینے میاندم میں گھر کے اندر ایک لڑکی کو زنجیروں سے باندھا گیا ہے، ایس ایچ اُو تھانہ فتح پور روشن علی، لیڈ ی پولیس کانسٹیبل و دیگر پولیس نفری نےسپینے میاندم پہنچ کر مذکورہ گھر کے کمرے سے زنجیروں سے باندھی گئی لڑکی کو بحفاظت بازیاب کرایا، مسماۃ (ث) نے بازیاب ہونے کے بعد تھانہ فتح پور پولیس کو بیان دیتے ہوئے کہا کہ میں نے اپنے والد کی مرضی کے بغیر اپنی رضامندی سے مسمی رحمت علی ولد درے سکنہ ڈھنڈ جوختی کے ساتھ نکاح کیا۔ میرے نکاح کے بارے میں آج میرے والد علی رحمن اور بھائی مجیب الرحمن کو علوم ہوا جنہوں نے مجھے ستون کے ساتھ زنجیروں سے باندھ کر چھریوں کے ذریعے جان سے مارنے کی دھمکیاں  دی۔

تھانہ فتح پور پولیس نے علی رحمن ولد عبد الرحمن، مجیب الرحمن ولد علی رحمن سکنہ سپینے میاندم کو گرفتار کر لیا ہے۔

( خبر جاری ہے )

ملتی جلتی خبریں
Comments
Loading...