بیوہ شوہر کے قاتلوں کیخلاف فریاد سُنارہی تھی کہ اسی دوران بیٹا بھی دم توڑ گیا، ملزمان گرفتار نہ ہوسکے

سوات (زما سوات ڈاٹ کام ، تازہ ترین۔ 15 جولائی 2018ء) بلوگرام سے تعلق رکھنے والی بیوہ خاتون حسن بی بی نے کہا کہ میرے شوہر اور بیٹے کو قتل کرنے والے ملزمان پولیس کی آشیر باد سے کھلے عام پھیر رہے ہیں اور 14روز گزرنے کے باجود ملزمان کو گرفتار نہیں کیا جارہا ہے ، ملزمان اب ہمیں قتل کرنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں ، بیوہ خاتون اور سات بیٹیوں کی ماں حسن بی بی نے سوات پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے زار و قطار روتے ہوئے اپنی ادستان بیان کرتے ہوئے کہا کہ دو ہفتے قبل ان کا شوہر نصیب روان بیٹے شوکت علی کے ہمراہ میلہ گاہ کسئی میں موجود اپنی زمین پر گیا جہاں پر اس کے بھائی شاہ بخت روان او راس کے بیٹے لیاقت نے میرے شوہر اور بیٹے پر فائرنگ کی جس سے شوہر جاں بحق اور بیٹا شدیدزخمی ہوگیاجو تاحال بے ہوشی کی حالت میں تھے اور آج وفات پاگئے ، انہوں نے کہاکہ اس ظلم کیخلاف ہم نے متعلقہ پولیس اسٹیشن میں رپورٹ درج کرائی مگر ملزمان تاحال گرفتار نہیں ہوئے بلکہ اب ہمیں بھی دھمکیاں دے رہے ہیں،انہوں نے کہاکہ میرے شوہر کو اپنی ہی جائیدادکی وجہ سے قتل کیاگیا مگرپولیس ملزموں کی گرفتاری میں تاحال ناکام ہے جبکہ دوسری جانب ملزم کے دیگر بھائی بھی ملزموں کی طرفداری کررہے ہیں،انہوں نے روتے ہوئے پولیس حکام سے اپیل کی کہ ان کے شوہر کے قاتلوں کو جلد ازجلد گرفتار کرکے انہیں انصاف فراہم کیا جائے۔
بیوہ خاتون اپنی فریاد سنارہی تھی اور اسی دوران اسکا زخمی بیٹا بھی پشاور میں دم توڑ گیا ، انکو خبر بھی نہ ہوئی ، گذشتہ روز پریس کلب میں بیوہ خاتون اپنے شوہر کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف پریس کانفرنس کے دوران زار و قطار رو رہی تھی اور اسکا زخمی25سالہ بیٹا پشاور میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے خالق حقیقی سے جا ملا جسکی ان کو خبر نہیں ہوئی اور علاقہ عوام ان سے یہ خبر چھپا کر گھر لے گئے جہاں پر اپنے جوان سال بیٹے کی لاش دیکھ کر بے ہوش ہوگئی اور ان پر غشی کے دورے پڑنے لگیں ۔

( خبر جاری ہے )

ملتی جلتی خبریں
Comments
Loading...