نوازشریف اور مریم نواز کی جمعہ کو وطن واپسی متوقع

لندن: سابق وزیراعظم نوازشریف اور مریم نواز کی جمعہ کو وطن واپسی متوقع ہے جب کہ نیب کا کہنا ہے نوازشریف اورمریم نواز کو پاکستان پہنچتے ہی ایئرپورٹ سے گرفتار کرلیا جائے گا

لندن میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کے دوران جب صحافی نے مریم نواز سے سوال کیا کہ احتساب عدالت کے فیصلے کے بعد 10 روز اندر اپیل کرنا لازمی ہے تو مریم نواز کا کہنا تھا کہ ہم اس سے پہلے ہی وطن واپس چلے جائیں گے جب کہ ذرائع کا کہنا ہے کہ نوازشریف اورمریم نواز جمعہ 13 جولائی کو اسلام آباد ایئرپورٹ پہنچیں گے۔

مریم نواز نے کہا کہ ایون فیلڈ ریفرنس کا پورا فیصلہ مفروضات پر دیا گیا اور اس میں صرف نوازشریف کو نشانہ بنایا گیا، فیصلے کے خلاف اپیل کے لیے قانونی راستہ اپنائیں گے اور اگر تحقیقات میں برطانیہ سے مدد مانگی گئی تو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے گا کیوں کہ جب برطانیہ نے ٹرسٹ ڈیڈ کو درست قراردے دیا تو پاکستانی عدالت اسے غط کیسے کہہ سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ فیصلے میں کہیں نہیں لکھا کہ کرپشن ہوئی تو سزا کس بات پر دی گئی، نوازشریف اس کیس سے بری ہوئے انہوں نے کوئی کرپشن نہیں کی۔

مریم نواز نے کہا کہ کوئی بھی شخص میری اور بھائی کی ٹرسٹ ڈیڈ کو غلط نہیں کہہ سکتا اور کسی بھی صاف شفاف عدالت سے اتنا کمزور فیصلہ نہیں آسکتا اگر کہا جائے کہ فیصلے میں مضحکہ خیز چیزیں ہیں تو یہ بے جا نہ ہوگا۔

دوسری جانب قومی احتساب بیورو (نیب) نے احتساب عدالت سے نواز شریف، مریم اور کیپٹن صفدر (ر) کے وارنٹ گرفتاری حاصل کرلیے ہیں۔

نیب کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ احتساب عدالت سے حاصل کرلیا ہے اور گرفتاری کے وارنٹ بھی حاصل کرلئے ہیں۔ قانون کے مطابق نواز شریف، مریم نواز، کیپٹن ریٹائرڈ صفدر، حسن اور حسین نواز کی گرفتاری کے لئے لائحہ عمل کی تیاری شروع کردی گئی ہے۔

نیب کا کہنا ہے نوازشریف اورمریم نواز کو پاکستان پہنچتے ہی ایئرپورٹ سے گرفتار کرلیا جائے گا۔

Facebook Comments